پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن بدقسمت ہے، صدر ایتھلیٹکس فیڈریشن اکرم ساہی

لاہور میں اولمپیئن ایتھلیٹ ارشد ندیم کے ہمراہ نیوز کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ پی او اے کی جانب سے معطلی کے باوجود ہم نے اپنا کام جاری رکھا۔ ہم نے کام نہیں چھوڑا۔ ہم نے کھلاڑیوں مواقع دئیے  اور آج ہم فخر کے ساتھ کہہ سکتے ہیں کہ ہم نے میڈلز جیتے ہیں۔ ملک کا نام روشن کیا ہے۔

 پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن تو بدقسمت ہے وہ کہہ بھی نہیں سکتی کہ ہماری فیڈریشن نے یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ معطل کرنے والوں کو سوچنا چاہیے کہ معطل کرنے والے کامیاب ہیں یا معطل کیے جانے والے کامیاب ہیں جنہوں نے میڈل جیتا ہے۔

اکرم ساہی نے سوال کیا کہ ارشد ندیم کو پی او اے نے کیا انعام دیا ہے؟ کیا یہ انعام ہے کہ ان سے تحریری جواب طلب کیا جائے؟

ارشد ندیم نے اپنی فلائٹ تبدیل کی تاکہ لاہور آ سکے جہاں ان کے والدین آ رہے تھے تو فلائٹ تبدیل کرنے پر ارشد ندیم سے جواب طلب کر لیا جاتا ہے۔

اکرم ساہی نے کہا کہ ارشد ندیم کے کوچ کا ایکریڈیٹیشن نہیں کرایا جاتا جو کہ ان کی ذمہ داری ہے۔ میں تو انہیں کہوں گا جو کام کرنا چاہتا ہے خدارا اسے کام کرنے دیں۔ آپ اپنی طرف سے آئی او سی بنے بیٹھے ہیں جیسے پاکستانی ہی نہ ہوں۔

صدر ایتھلیٹکس فیڈریشن نے کہا کہ ارشد ندیم اس وقت دنیا کے نمبر ون ایتھلیٹ ہیں۔ انہوں نے اولمپک اور ورلڈ چیمپیئن سے زیادہ تھروکی ہے۔ ہم نے ثابت کیا ہے کہ پاکستان کا ایتھلیٹ دنیا کا نمبر ون ایتھلیٹ بن سکتا ہے۔ اب اولمپکس اور دیگر انٹر نیشنل مقابلوں پر فوکس ہے۔

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on linkedin
LinkedIn
Share on pinterest
Pinterest
Share on pocket
Pocket
Share on whatsapp
WhatsApp

متعلقہ خبریں

Start a Conversation

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by Live Score & Live Score App